تازہ نظمیں

نظموں کا وسیع ذخیرہ-اردو شاعری کی ایک صنف


اردو میں نظم کی صنف انیسویں صدی کی آخری دہائیوں کے دوران انگریزی کے اثر سے پیدا ہوئی جو دھیرے دھیرے پوری طرح قائم ہو گئی۔ نظم بحر اور قافیے میں بھی ہوتی ہے اور اس کے بغیر بھی۔ اب نثری نظم بھی اردو میں مستحکم ہو گئی ہے۔


نظم
14-اگست
اپنے شہر کے لئے دعا
احمدآباد
آخری آدمی
آخری المیہ
آخری خواہش
آخری ملاقات
ادھورے خواب
اردو کی شہرۂ آفاق ویب سائٹ ریختہ کی علمی و ادبی خدمات پر منظوم تأثرات
آس
اس طرح کی باتوں میں احتیاط کرتے ہیں
اساطیری نظم
استری کرتے ہوئے
استعارہ
اسکول
آسمان میں آگ
اسے کہنا
اقرار
اک لڑکی
اگر عورت کما سکتی تو
الاؤ
التجا
امکان
انتظار
اندیشہ
انوسینس
اے لاہور
اے ہوا شور کر
ایذرا پاؤنڈ کی موت پر
ایس ایم ایس
ایک عورت
ایک غریب شاعر کی موت پر
ایک لمحہ
ایک یاد
اینزائٹی
باتیں کرو
بادشاہ تیری دہلیز کا دربان ہے
بارش
باز گشت
بشارت کے کاسوں میں
بہت کٹھن ہے سفر
بھگوان رام
بھئے کبیر اداس
بے آواز دکھ
بے چینی
بے سایہ پیڑ
بیتے ہوئے کل کا انتظار
بیوہ کی جوانی
پتھر کے اس بت کی کہانی
پرندوں بھرا آسمان
پہچان
تاج محل
تخلیق
تخلیق
ترک تعلق کے بعد
تشنگی
تعاقب
تلاش نور
تیری یاد
ٹیپو سلطان
جستجو
جسم سے آگے کی منزل
جو راہ چھوٹ گئی تھی
جواں آگ
جواں ہوتا بڑھاپا
چارہ گر
چھوٹے قد کے لوگ
چوکیدار
حرف سادہ و رنگیں
حسرت
خاموشی کا شور
خرگوش کا غم
خواب
خواب کے آخری حصے میں
خوابوں خیالوں کی اپسرا
خواہش
درد حرف چننے لگے
دسمبر کی آواز
دشت عمر
دشمن کی طرف دوستی کا ہاتھ
دلی پہ قربان
دودھ کا جلا
دور کا سفر
دور کنارا
دوست
ڈاکٹر ذاکر حسین
ڈھول والا
ذخیرہ گھر مقفل ہیں
رائیگانی
رستا درد
رشتہ
روایتی محبت
روز اس آس پہ
روشنی کا غلام
روئے بھگت کبیر
زمیں پر آخری لمحے
زمین سمٹ کر میرے تلوے سے آ لگی
زندگی اور موت
زومنگ
سپیرا
seek-warrow-warrow-eseek-e1 - 100 of 185 items