ADVERTISEMENT

اشعار پرگریبان

شاعری میں گریبان تبھی

گریبان ہے جب وہ چاک ہو ۔ گریبان کا چاک ہونا ، پیروں میں آبلے آجانا ، دامن کا تارتار ہوجانا ہی عاشق کے جنون ودیوانگی کا کمال ہے ۔ ہم صحیح سلامت گریبان والوں کو چاک گریبانی کا یہ قصہ بھی پڑھنا چاہیے اور جنون کی تصویر دیکھنی چاہیئے۔

ہمیشہ میں نے گریباں کو چاک چاک کیا

تمام عمر رفوگر رہے رفو کرتے

حیدر علی آتش

ایسا کروں گا اب کے گریباں کو تار تار

جو پھر کسی طرح سے کسی سے رفو نہ ہو

شیخ ظہور الدین حاتم

سو بار ترا دامن ہاتھوں میں مرے آیا

جب آنکھ کھلی دیکھا اپنا ہی گریباں تھا

اصغر گونڈوی

جب تک کہ گریبان میں یک تار رہے گا

تب تک مری گردن کے اوپر بار رہے گا

شیخ ظہور الدین حاتم
ADVERTISEMENT

کیا بڑا عیب ہے اس جامۂ عریانی میں

چاک کرنے کو کبھی اس میں گریباں نہ ہوا

شیخ ظہور الدین حاتم