Ada Jafarey's Photo'

ادا جعفری

1924 - 2015 | کراچی, پاکستان

اہم پاکستانی شاعرہ، اپنی نرم وشگفتہ شعری آواز کے لیے معروف

اہم پاکستانی شاعرہ، اپنی نرم وشگفتہ شعری آواز کے لیے معروف

ادا جعفری

غزل 43

اشعار 40

ہاتھ کانٹوں سے کر لیے زخمی

پھول بالوں میں اک سجانے کو

میں آندھیوں کے پاس تلاش صبا میں ہوں

تم مجھ سے پوچھتے ہو مرا حوصلہ ہے کیا

ہونٹوں پہ کبھی ان کے مرا نام ہی آئے

آئے تو سہی بر سر الزام ہی آئے

ہمارے شہر کے لوگوں کا اب احوال اتنا ہے

کبھی اخبار پڑھ لینا کبھی اخبار ہو جانا

اگر سچ اتنا ظالم ہے تو ہم سے جھوٹ ہی بولو

ہمیں آتا ہے پت جھڑ کے دنوں گل بار ہو جانا

کتاب 14

ادا جعفری

فن و شخصیت

1998

غزل نما

 

1988

غزل نما

 

2012

غزالاں تم تو واقف ہو

 

1982

حرف شناسائی

 

1999

جو رہی سو بے خبری رہی

خود نوشت

2011

جو رہی سو بے خبری رہی

خود نوشت

1996

میں ساز ڈھونڈتی رہی

 

1982

ساز سخن بہانہ ہے

 

1982

ساز سخن

 

1988

تصویری شاعری 6

ویسے ہی خیال آ گیا ہے یا دل میں ملال آ گیا ہے آنسو جو رکا وہ کشت_جاں میں بارش کی مثال آ گیا ہے غم کو نہ زیاں کہو کہ دل میں اک صاحب_حال آ گیا ہے جگنو ہی سہی فصیل_شب میں آئینہ_خصال آ گیا ہے آ دیکھ کہ میرے آنسوؤں میں یہ کس کا جمال آ گیا ہے مدت ہوئی کچھ نہ دیکھنے کا آنکھوں کو کمال آ گیا ہے میں کتنے حصار توڑ آئی جینا تھا محال آ گیا ہے

 

ویڈیو 17

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
توفیق سے کب کوئی سروکار چلے ہے

ادا جعفری

شکست_ساز

میں نے گل_ریز بہاروں کی تمنا کی تھی ادا جعفری

آڈیو 12

ایک آئینہ رو بہ رو ہے ابھی

بیگانگئ طرز ستم بھی بہانہ ساز

عالم ہی اور تھا جو شناسائیوں میں تھا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ بلاگ

 

مزید دیکھیے

"کراچی" کے مزید شعرا

  • آرزو لکھنوی آرزو لکھنوی
  • سلیم احمد سلیم احمد
  • انور شعور انور شعور
  • محشر بدایونی محشر بدایونی
  • قمر جلالوی قمر جلالوی
  • عذرا عباس عذرا عباس
  • عبید اللہ علیم عبید اللہ علیم
  • سلیم کوثر سلیم کوثر
  • سیماب اکبرآبادی سیماب اکبرآبادی
  • جمال احسانی جمال احسانی