Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

مدح

MORE BYفیض احمد فیض

    دلچسپ معلومات

    (حسین شہید سہروردی مرحوم نے راولپنڈی \"سازش\" کیس ملزموں کی جانب سے وکالت کی تھی۔ مقدمے کے خاتمے پر انھیں یہ سپاسنامہ پیش کیا گیا)۔

    (1)

    کس طرح بیاں ہو ترا پیرایۂ تقریر

    گویا سر باطل پہ چمکنے لگی شمشیر

    وہ زور ہے اک لفظ ادھر نطق سے نکلا

    واں سینۂ اغیار میں پیوست ہوئے تیر

    گرمی بھی ہے ٹھنڈک بھی روانی بھی سکوں بھی

    تاثیر کا کیا کہیے ہے تاثیر ہی تاثیر

    اعجاز اسی کا ہے کہ ارباب ستم کی

    اب تک کوئی انجام کو پہنچی نہیں تدبیر

    اطراف وطن میں ہوا حق بات کا شہرہ

    ہر ایک جگہ مکر و ریا کی ہوئی تشہیر

    روشن ہوئے امید سے رخ اہل وفا کے

    پیشانئ اعدا پہ سیاہی ہوئی تحریر

    (2)

    حریت آدم کی رہ سخت کے رہگیر

    خاطر میں نہیں لاتے خیال دم تعزیر

    کچھ ننگ نہیں رنج اسیری کہ پرانا

    مردان صفا کیش سے ہے رشتۂ زنجیر

    کب دبدبۂ جبر سے دبتے ہیں کہ جن کے

    ایمان و یقیں دل میں کیے رہتے ہیں تنویر

    معلوم ہے ان کو کہ رہا ہوگی کسی دن

    ظالم کے گراں ہاتھ سے مظلوم کی تقدیر

    آخر کو سرافراز ہوا کرتے ہیں احرار

    آخر کو گرا کرتی ہے ہر جور کی تعمیر

    ہر دور میں سر ہوتے ہیں قصر جم و دارا

    ہر عہد میں دیوار ستم ہوتی ہے تسخیر

    ہر دور میں ملعون شقاوت ہے شمرؔ کی

    ہر عہد میں مسعود ہے قربانئ شبیر

    (3)

    کرتا ہے قلم اپنے لب و نطق کی تطہیر

    پہنچی ہے سر حرف دعا اب مری تحریر

    ہر کام میں برکت ہو ہر اک قول میں قوت

    ہر گام پہ ہو منزل مقصود قدم گیر

    ہر لحظہ ترا طالع اقبال سوا ہو

    ہر لحظہ مددگار ہو تدبیر کی تقدیر

    ہر بات ہو مقبول، ہر اک بول ہو بالا

    کچھ اور بھی رونق میں بڑھے شعلۂ تقریر

    ہر دن ہو ترا لطف زباں اور زیادہ

    اللہ کرے زور بیاں اور زیادہ

    مأخذ :
    • کتاب : Nuskha Hai Wafa (Kulliyat-e-Faiz) (Pg. 570)
    • مطبع : Educational Publishing House (2009)
    • اشاعت : 2009
    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے