Hamida Shaheen's Photo'

حمیدہ شاہین

1963 | لاہور, پاکستان

حمیدہ شاہین

غزل 21

نظم 27

اشعار 4

کون بدن سے آگے دیکھے عورت کو

سب کی آنکھیں گروی ہیں اس نگری میں

ترے گیتوں کا مطلب اور ہے کچھ

ہمارا دھن سراسر مختلف ہے

ستارہ ہے کوئی گل ہے کہ دل ہے

تری ٹھوکر میں پتھر مختلف ہے

فضا یوں ہی تو نہیں ملگجی ہوئی جاتی

کوئی تو خاک نشیں ہوش کھو رہا ہوگا

کتاب 4

 

آڈیو 5

رہین_خواب_گم_گشتہ ہمارے سامنے مت آ

مری دنیا کا محور مختلف ہے

کھیل میں کچھ تو گڑبڑ تھی جو آدھے ہو کر ہارے لوگ

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

متعلقہ شعرا

"لاہور" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

بولیے