حقیر

غزل 10

اشعار 22

جانتا اس کو ہوں دوا کی طرح

چاہتا اس کو ہوں شفا کی طرح

کیا جانیں ان کی چال میں اعجاز ہے کہ سحر

وہ بھی انہیں سے مل گئے جو تھے ہمارے لوگ

خوب مل کر گلے سے رو لینا

اس سے دل کی صفائی ہوتی ہے

تھوڑی تکلیف سہی آنے میں

دو گھڑی بیٹھ کے اٹھ جائیے گا

مجھے اب موت بہتر زندگی سے

وہ کی تم نے ستم گاری کہ توبہ

کتاب 1

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے