Saima Esma's Photo'

صائمہ اسما

لاہور, پاکستان

غزل 8

نظم 8

اشعار 7

نہ جانے کیسی نگاہوں سے موت نے دیکھا

ہوئی ہے نیند سے بیدار زندگی کہ میں ہوں

کبھی کبھی تو اچھا خاصا چلتے چلتے

یوں لگتا ہے آگے رستہ کوئی نہیں ہے

آج سوچا ہے کہ خود رستے بنانا سیکھ لوں

اس طرح تو عمر ساری سوچتی رہ جاؤں گی

قطعہ 4

 

ای- کتاب 2

 

"لاہور" کے مزید شعرا

  • وصی شاہ وصی شاہ
  • شاہین عباس شاہین عباس
  • ندیم بھابھہ ندیم بھابھہ
  • ناصر زیدی ناصر زیدی
  • فریحہ نقوی فریحہ نقوی
  • علی اکبر ناطق علی اکبر ناطق
  • حماد نیازی حماد نیازی
  • سید انجم جعفری سید انجم جعفری
  • ناہید قاسمی ناہید قاسمی
  • عاصمہ طاہر عاصمہ طاہر