Editor Choiceمنتخب Popular Choiceمقبول
غزلصنف
0 ا ,آج پھر گردش_تقدیر پہ رونا آیا1
0 ا ,اے محبت ترے انجام پہ رونا آیا1
0 ا ,بہار آئی کسی کا سامنا کرنے کا وقت آیا1
0 ا ,پیہم تلاش_دوست میں کرتا چلا گیا0
0 ا ,تری انجمن میں ظالم عجب اہتمام دیکھا1
0 ا ,تم نے یہ کیا ستم کیا ضبط سے کام لے لیا0
0 ا ,جادۂ_عشق میں گر گر کے سنبھلتے رہنا0
0 ا ,چاندنی میں رخ_زیبا نہیں دیکھا جاتا1
0 ا ,خوش ہوں کہ مرا حسن_طلب کام تو آیا0
0 ا ,دل مرکز_حجاب بنایا نہ جائے_گا1
0 ا ,زمیں پر فصل_گل آئی فلک پر ماہتاب آیا0
0 ا ,زندگی کا درد لے کر انقلاب آیا تو کیا0
0 ا ,شاید آغاز ہوا پھر کسی افسانے کا1
0 ا ,مری زندگی ہے ظالم ترے غم سے آشکارا1
0 ا ,موسم_گل ساتھ لے کر برق و دام آ ہی گیا0
0 ا ,نظر_نواز نظاروں میں جی نہیں لگتا0
0 ا ,نگاہ_ناز کا اک وار کر کے چھوڑ دیا0
0 آداب عاشقی سے بیگانہ کہہ رہی ہے0
0 آدمی نہ اتنا بھی دور ہو زمانے سے0
0 ان کو شرح غم سنائی جائے گی0
0 آنکھ ان کو دیکھتی ہے نظارا کیے بغیر0
0 آنکھوں سے دور صبح کے تارے چلے گئے0
0 اہانت دل صبر آزما نہیں کرتے0
0 بدلے بدلے مرے غم خوار نظر آتے ہیں0
0 بے خودی ہے نہ ہوشیاری ہے0
0 بے کسی سے مرنے مرنے کا بھرم رہ جائے گا0
0 بیت گیا ہنگام قیامت روز قیامت آج بھی ہے0
0 بیگانہ ہو کے بزم جہاں دیکھتا ہوں میں0
0 ترے بغیر عجب بزم دل کا عالم ہے0
0 تری یادوں سے دل فروزاں کریں گے0
0 تصویر بناتا ہوں تری خون جگر سے0
0 تکمیل شباب چاہتا ہوں0
0 جام گردش میں ہے دربند ہیں مے خانوں کے0
0 جلوۂ حسن کرم کا آسرا کرتا ہوں میں0
0 جو دل پہ گزرتی ہے وہ سمجھا نہیں سکتے0
0 خانۂ امید بے نور و ضیا ہونے کو ہے0
0 خرد کو آزمانا چاہتا ہوں0
0 دل لذت نگاہ کرم پا کے رہ گیا0
0 دل میں کسی خلش کا گزر چاہتا ہوں میں0
0 دل وہی دل جسے ناشاد کئے جاتا ہوں0
0 دور ہیں وہ اور کتنی دور0
0 ر ,تہمید_ستم اور ہے تکمیل_جفا اور0
0 ر ,غم_عشق رہ گیا ہے غم_جستجو میں ڈھل کر1
0 ر ,لمحہ لمحہ بار ہے تیرے بغیر0
0 راہ خدا میں عالم رندانہ مل گیا0
0 رنگ صنم کدہ جو ذرا یاد آ گیا0
0 رہ وفا میں کوئی صاحب جنوں نہ ملا0
0 روح کو تڑپا رہی ہے ان کی یاد0
0 زندگی ان کی چاہ میں گزری0
0 سر بھی ہے پائے یار بھی شوق سوا کو کیا ہوا0
0 سرنگوں کر ہی دیا ذوق جبیں سائی نے0
0 شب کی بہار صبح کی ندرت نہ پوچھئے0
0 شوخ نظروں میں جو شامل برہمی ہو جائے گی0
0 صبح کا افسانہ کہہ کر شام سے0
0 طوف حرم نہ دیر کی گہرائیوں میں ہے0
0 عشق کا کوئی خیر خواہ تو ہے0
0 عشق کی چنگاریوں کو پھر ہوا دینے لگے0
0 غم جہاں کے فسانے تلاش کرتے ہیں0
0 فریب محبت سے غافل نہیں ہوں0
0 کب تک شکیلؔ دل کو دعا کیجئے گا آپ0
0 کرنے دو اگر قتال جہاں تلوار کی باتیں کرتے ہیں0
0 کہیں حسن کا تقاضا کہیں وقت کے اشارے0
0 گلشن ہو نگاہوں میں تو جنت نہ سمجھنا0
0 ل ,اک اک قدم فریب_تمنا سے بچ کے چل0
0 لطف نگاہ ناز کی تہمت اٹھائے کون0
0 لطیف پردوں سے تھے نمایاں مکیں کے جلوے مکاں سے پہلے0
0 م ,اس درجہ بد_گماں ہیں خلوص_بشر سے ہم0
0 میری بربادی کو چشم معتبر سے دیکھیے0
0 میری دیوانگی نہیں جاتی0
0 ن ,اے عشق یہ سب دنیا والے بیکار کی باتیں کرتے ہیں1
0 ن ,جب کبھی ہم ترے کوچے سے گزر جاتے ہیں0
0 ن ,جذبات کی رو میں بہہ گیا ہوں0
0 ن ,جینے والے قضا سے ڈرتے ہیں0
0 ن ,حقیقت_غم_الفت چھپا رہا ہوں میں0
0 ن ,دنیا کی روایات سے بیگانہ نہیں ہوں0
0 ن ,سرگزشت_دل کو روداد_جہاں سمجھا تھا میں0
0 ن ,شکوے ترے حضور کئے جا رہا ہوں میں0
0 ن ,غم سے کہاں اے عشق مفر ہے (ردیف .. ن)0
0 ن ,کسی کو جب نگاہوں کے مقابل دیکھ لیتا ہوں0
0 ن ,مری زندگی پہ نہ مسکرا مجھے زندگی کا الم نہیں0
0 ن ,وہ ہم سے دور ہوتے جا رہے ہیں1
0 ن ,یہ عیش_و_طرب کے متوالے بیکار کی باتیں کرتے ہیں0
0 نصیب در پہ ترے آزمانے آیا ہوں0
0 نہ سوچا تھا یہ دل لگانے سے پہلے0
0 ہ ,اٹھی پھر دل میں اک موج_شباب آہستہ آہستہ0
0 ہائے اس مجبورئ ذوق نظر کو کیا کروں0
0 ہر گوشۂ نظر میں سمائے ہوئے ہو تم0
0 ہزار قید جواں سے چھٹ کر بہار کا آسرا کریں گے0
0 ہزار قید خزاں سے چھٹ کر بہار کا آسرا کریں گے0
0 ہم ہیں اور ان کی خوشی ہے آج کل0
0 ہوئی ہم سے یہ نادانی تری محفل میں آ بیٹھے0
0 وہ دل میں رہتے ہیں دل کا نشاں نہیں معلوم0
0 وہ یوں کھو کے مجھے پایا کریں گے0
0 ے ,اب تک شکایتیں ہیں دل_بد_نصیب سے1
0 ے ,اب تو خوشی کا غم ہے نہ غم کی خوشی مجھے0
0 ے ,ابھی جذبۂ_شوق کامل نہیں ہے0
0 ے ,ان سے امید_رہنمائی ہے0
0 ے ,ان کے بغیر ہم جو گلستاں میں آ گئے0
0 ی ,آنکھ سے آنکھ ملاتا ہے کوئی1
0 ے ,بس اک نگاہ_کرم ہے کافی اگر انہیں پیش_و_پس نہیں ہے0
seek-warrow-warrow-eseek-e1 - 100 of 128 items