noImage

تراب کاکوروی

1768 - 1858

تراب کاکوروی

اشعار 3

شہر میں اپنے یہ لیلیٰ نے منادی کر دی

کوئی پتھر سے نہ مارے مرے دیوانے کو

  • شیئر کیجیے

ہدف جس کا فقط دل ہو میں ایسے تیر کے قرباں

بدن جس سے نہ گھائل ہو میں اس شمشیر کے قرباں

  • شیئر کیجیے

اڑ کے آیا ہے لگن میں ترے جل جانے کو

شوق سے پھونک دے اے شمع تو پروانے کو

  • شیئر کیجیے
 

کتاب 3

کلیات تراب

 

1889

مقالات صوفیہ

 

1893