اقبال ساجد

  • 1932-1988
  • لاھور

مقبول عوامی پاکستانی شاعر ، کم عمری میں وفات

مقبول عوامی پاکستانی شاعر ، کم عمری میں وفات

Editor Choiceمنتخب Popular Choiceمقبول
غزلصنف
0 ا ,اس سال شرافت کا لبادہ نہیں پہنا0
0 ا ,پتہ کیسے چلے دنیا کو قصر_دل کے جلنے کا0
0 ا ,پیاسے کے پاس رات سمندر پڑا ہوا0
0 ا ,خشک اس کی ذات کا ساتوں سمندر ہو گیا0
0 ا ,خوف دل میں نہ ترے در کے گدا نے رکھا0
0 ا ,دنیا نے زر کے واسطے کیا کچھ نہیں کیا0
0 ا ,دہر کے اندھے کنویں میں کس کے آوازہ لگا0
0 ا ,رخ_روشن کا روشن ایک پہلو بھی نہیں نکلا0
0 ا ,سورج ہوں زندگی کی رمق چھوڑ جاؤں_گا1
0 ا ,غار سے سنگ ہٹایا تو وہ خالی نکلا0
0 ا ,غار سے سنگ ہٹایا تو وہ خالی نکلا0
0 ا ,کل شب دل_آوارہ کو سینے سے نکالا0
0 ا ,ملا تو حادثہ کچھ ایسا دل خراش ہوا0
0 ا ,وہ چاند ہے تو عکس بھی پانی میں آئے_گا0
0 ا ,وہ دوست تھا تو اسی کو عدو بھی ہونا تھا0
0 ر ,جانے کیوں گھر میں مرے دشت_و_بیاباں چھوڑ کر0
0 عجب صدا یہ نمائش میں کل سنائی دی0
0 لگا دی کاغذی ملبوس پر مہر ثبات اپنی0
0 ن ,بے_خبر دنیا کو رہنے دو خبر کرتے ہو کیوں0
0 ن ,سنگ_دل ہوں اس قدر آنکھیں بھگو سکتا نہیں1
0 ن ,مجھے نہیں ہے کوئی وہم اپنے بارے میں0
0 ن ,ہر کسی کو کب بھلا یوں مسترد کرتا ہوں میں0
0 ن ,وہ مسلسل چپ ہے تیرے سامنے تنہائی میں0
0 ہ ,سائے کی طرح بڑھ نہ کبھی قد سے زیادہ0
0 و ,پھینک یوں پتھر کہ سطح_آب بھی بوجھل نہ ہو0
0 و ,سورج ہوں چمکنے کا بھی حق چاہئے مجھ کو0
0 ی ,اپنی انا کی آج بھی تسکین ہم نے کی0
0 ی ,اس آئنے میں دیکھنا حیرت بھی آئے_گی2
0 ی ,اک ردائے_سبز کی خواہش بہت مہنگی پڑی0
0 ی ,اک طبیعت تھی سو وہ بھی لاابالی ہو گئی1
0 ی ,ایسے گھر میں رہ رہا ہوں دیکھ لے بے_شک کوئی0
0 ے ,تم مجھے بھی کانچ کی پوشاک پہنانے لگے0
0 ی ,ختم راتوں_رات اس گل کی کہانی ہو گئی1
0 ی ,خدا نے جس کو چاہا اس نے بچے کی طرح ضد کی0
0 ی ,سرسبز دل کی کوئی بھی خواہش نہیں ہوئی0
0 ے ,کٹتے ہی سنگ_لفظ گرانی نکل پڑے0
0 ی ,گڑے مردوں نے اکثر زندہ لوگوں کی قیادت کی0
0 ے ,موند کر آنکھیں تلاش_بحر_و_بر کرنے لگے0
0 ے ,ہر گھڑی کا ساتھ دکھ دیتا ہے جان_من مجھے0
seek-warrow-w
  • 1
arrow-eseek-e1 - 39 of 39 items