Saghar Siddiqui's Photo'

ساغر صدیقی

1928 - 1974 | لاہور, پاکستان

ساغر صدیقی

غزل 42

اشعار 42

اے دل بے قرار چپ ہو جا

جا چکی ہے بہار چپ ہو جا

موت کہتے ہیں جس کو اے ساغرؔ

زندگی کی کوئی کڑی ہوگی

جس عہد میں لٹ جائے فقیروں کی کمائی

اس عہد کے سلطان سے کچھ بھول ہوئی ہے

لوگ کہتے ہیں رات بیت چکی

مجھ کو سمجھاؤ! میں شرابی ہوں

  • شیئر کیجیے

اے عدم کے مسافرو ہشیار

راہ میں زندگی کھڑی ہوگی

قطعہ 22

نعت 1

 

کتاب 6

دیوان ساغر صدیقی

 

1990

لوح جنوں

 

 

مقتل گل

 

1974

محبت مستقل غم ہے

 

 

ساغر

 

2009

شکست ساغر

 

1983

 

ویڈیو 6

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Kuch nahi mudda faqiron ka

ساغر صدیقی

Yaa rab tere jahaan ke kya haal ho gaye

ساغر صدیقی

آڈیو 10

ایک وعدہ ہے کسی کا جو وفا ہوتا نہیں

روداد_محبت کیا کہیے کچھ یاد رہی کچھ بھول گئے

آہن کی سرخ تال پہ ہم رقص کر گئے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"لاہور" کے مزید شعرا

  • علامہ اقبال علامہ اقبال
  • ناصر کاظمی ناصر کاظمی
  • عباس تابش عباس تابش
  • جاوید شاہین جاوید شاہین
  • نبیل احمد نبیل نبیل احمد نبیل
  • احمد ندیم قاسمی احمد ندیم قاسمی
  • حبیب جالب حبیب جالب
  • شاہین عباس شاہین عباس
  • فیض احمد فیض فیض احمد فیض
  • عدیم ہاشمی عدیم ہاشمی