Siddique Mujibi's Photo'

صدیق مجیبی

1931 - 2014 | رانچی, ہندوستان

غزل 27

اشعار 8

میں وہ ٹوٹا ہوا تارا جسے محفل نہ راس آئی

میں وہ شعلہ جو شب بھر آنکھ کے پانی میں رہتا ہے

اک لہو کی بوند تھی لیکن کئی آنکھوں میں تھی

ایک حرف معتبر تھا اور کئی معنوں میں تھا

ناخدا ہو کہ خدا دیکھتے رہ جاتے ہیں

کشتیاں ڈوبتی ہیں اس کے مکیں ڈوبتے ہیں

ای- کتاب 1

سرمایۂ غزل

 

2014

 

شعرا متعلقہ

  • ندا فاضلی ندا فاضلی ہم عصر
  • عاقب صابر عاقب صابر ہم عصر
  • ثاقب لکھنوی ثاقب لکھنوی ہم عصر
  • اقرا عافیہ اقرا عافیہ ہم عصر
  • عمیر نجمی عمیر نجمی ہم عصر
  • کرشن بہاری نور کرشن بہاری نور ہم عصر
  • کشور ناہید کشور ناہید ہم عصر
  • عبدالرحمان مومن عبدالرحمان مومن ہم عصر
  • جوشؔ ملیح آبادی جوشؔ ملیح آبادی ہم عصر
  • احمد ہمدانی احمد ہمدانی ہم عصر

شعرا کے مزید "رانچی"

  • پرکاش فکری پرکاش فکری
  • وہاب دانش وہاب دانش
  • پرویز رحمانی پرویز رحمانی
 

Added to your favorites

Removed from your favorites