پروین شاکر

پاکستان کی مقبول ترین شاعرات میں شامل ، عورتوں کے مخصوص جذبوں کو آواز دینے کے لئے معروف

info iconمعنی کے لئے لفظ پر کلک کیجئے

آمد پہ تیری عطر و چراغ و سبو نہ ہوں


اتنا بھی بود و باش کو سادہ نہیں کیا

اب ان دریچوں پہ گہرے دبیز پردے ہیں


وہ تانک جھانک کا معصوم سلسلہ بھی گیا

عجب نہیں ہے کہ دل پر جمی ملی کائی


بہت دنوں سے تو یہ حوض صاف بھی نہ ہوا

اپنی رسوائی ترے نام کا چرچا دیکھوں


اک ذرا شعر کہوں اور میں کیا کیا دیکھوں

بوجھ اٹھائے ہوئے پھرتی ہے ہمارا اب تک


اے زمیں ماں تری یہ عمر تو آرام کی تھی

چلنے کا حوصلہ نہیں رکنا محال کر دیا


عشق کے اس سفر نے تو مجھ کو نڈھال کر دیا

چہرہ و نام ایک ساتھ آج نہ یاد آ سکے


وقت نے کس شبیہ کو خواب و خیال کر دیا

دھیمے سروں میں کوئی مدھر گیت چھیڑئیے


ٹھہری ہوئی ہواؤں میں جادو بکھیریے

ایک مشت خاک اور وہ بھی ہوا کی زد میں ہے


زندگی کی بے بسی کا استعارہ دیکھنا

ایک سورج تھا کہ تاروں کے گھرانے سے اٹھا


آنکھ حیران ہے کیا شخص زمانے سے اٹھا

غیر ممکن ہے ترے گھر کے گلابوں کا شمار


میرے رستے ہوئے زخموں کے حسابوں کی طرح

گواہی کیسے ٹوٹتی معاملہ خدا کا تھا


مرا اور اس کا رابطہ تو ہاتھ اور دعا کا تھا

حسن کے سمجھنے کو عمر چاہئے جاناں


دو گھڑی کی چاہت میں لڑکیاں نہیں کھلتیں

حسن کے سمجھنے کو عمر چاہئے جاناں


دو گھڑی کی چاہت میں لڑکیاں نہیں کھلتیں

اسی طرح سے اگر چاہتا رہا پیہم


سخن وری میں مجھے انتخاب کر دے گا

کیا کرے میری مسیحائی بھی کرنے والا


زخم ہی یہ مجھے لگتا نہیں بھرنے والا

میں پھول چنتی رہی اور مجھے خبر نہ ہوئی


وہ شخص آ کے مرے شہر سے چلا بھی گیا

میں سچ کہوں گی مگر پھر بھی ہار جاؤں گی


وہ جھوٹ بولے گا اور لا جواب کر دے گا

مقتل وقت میں خاموش گواہی کی طرح


دل بھی کام آیا ہے گمنام سپاہی کی طرح

ممکنہ فیصلوں میں ایک ہجر کا فیصلہ بھی تھا


ہم نے تو ایک بات کی اس نے کمال کر دیا

نہ جانے کون سا آسیب دل میں بستا ہے


کہ جو بھی ٹھہرا وہ آخر مکان چھوڑ گیا

  • :موضوعات
  • دل

قدموں میں بھی تکان تھی گھر بھی قریب تھا


پر کیا کریں کہ اب کے سفر ہی عجیب تھا

رفاقتوں کا مری اس کو دھیان کتنا تھا


زمین لے لی مگر آسمان چھوڑ گیا

اس کے یوں ترک محبت کا سبب ہوگا کوئی


جی نہیں یہ مانتا وہ بے وفا پہلے سے تھا

وہ تو خوش بو ہے ہواؤں میں بکھر جائے گا


مسئلہ پھول کا ہے پھول کدھر جائے گا

تمام

متعلقہ ویڈیو

This video is playing from YouTube

تصویری شاعری

Jaun Eliya